12

لبنانی حکومت مظاہروں کے سامنے نہ ٹھہر سکی، کابینہ مستعفی ہوگئی

گزشتہ ہفتے بیروت میں ہونے والے قیامت خیز دھماکے کے بعد لبنان میں مظاہرے بھوٹ پڑے تھے (فوٹو، اے ایف پی)

گزشتہ ہفتے بیروت میں ہونے والے قیامت خیز دھماکے کے بعد لبنان میں مظاہرے بھوٹ پڑے تھے (فوٹو، اے ایف پی)

بیروت: لبنان کے دارلحکومت میں قیامت خیز دھماکے کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال اور مظاہروں کے بعد لبنان کی پوری کابینہ مستعفی ہوگئی ہے اور توقع ہے جلد ہی وزیر اعظم حسن دیاب قوم سے خطاب میں مستعفی ہونے کا اعلان کردیں گے۔ 

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق مقامی میڈیا سے بات کرتے ہوئے لبنان کے وزیر صحت حسن حماد نے تصدیق کی ہے کہ وزیر اعظم حسن دیاب کی کابینہ مستعفی ہوچکی ہے اور توقع ہے بہت جلد وزیراعظم صدارتی محل جاکراستعفی  پیش کردیں گے۔

نئی حکومت کی تشکیل تک کابینہ نگران حکومت کا کام کرے گی۔

مزید تفصیلات شامل کی جارہی ہیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں