9

آئندہ برس پاکستان کی معیشت سنبھلنے لگے گی، ایشیائی ترقیاتی بینک

درآمدات میں کمی کے باعث پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہوا ہے، رپورٹ(فوٹو، فائل)

درآمدات میں کمی کے باعث پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہوا ہے، رپورٹ(فوٹو، فائل)

 اسلام آباد: ایشیائی ترقیاتی بینک(اے ڈی بی) نے آئندہ برس پاکستان کی معیشت میں بہتری اور شرح نمو مثبت 2 فی صد تک رہنے کی توقع ظاہر کی ہے۔ 

رپورٹ کے مطابق 2021 میں پاکستان کی جی ڈی پی 2 فیصد تک رہنے کی توقع ہے۔اس سے قبل اپریل میں اے ڈی بی نے رواں سال پاکستان کی معاشی شرح نمو کا تخمیمہ 2.6 فیصد لگایا تھاجب کہ اگلے سال کےلیے معاشی شرح نموکا اندازہ 3.6 فیصد لگایا گیا تھا۔

اے ڈی بی کے مطابق کورونا وائرس کی وجہ سے پاکستان کی معیشت بری طرح متاثرہوئی ہے۔کورونا میں کمی کے بعد پاکستان میں معاشی بحالی کا امکان ہے اور معاشی اصلاحات کی بحالی پرپاکستان میں اقتصادی سرگرمیاں بڑھنے کی توقع ہے۔ ایشیائی ترقیاتی بینک کے اندازے کے مطابق 2020 میں پاکستان میں مہنگائی کی شرح 10.7 فیصد تک رہے گی اور 2021 میں یہ کم ہو کر 7.5 فیصد تک رہنے کا امکان ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ درآمدات میں کمی کے باعث پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ کم ہوا ہے۔کورونا سے نمٹنےکے لیے پاکستان نے 1240 ارب روپےکاریلیف پیکج دیا جبکہ ٹڈی دل کے حملوں کے باوجود زرعی شعبے کی پیداوار2.7 فیصد رہی ہے۔

ایشیائی ترقیاتی بینک نے پیش گوئی کی ہے کہ آئندہ سال جون تک پاکستان کی معاشی ترقی کی شرح منفی صفر اعشاریہ چار فیصد سے بہتر ہوکر 2 فیصد مثبت ہوجائے گی۔ حکومت پاکستان نے 1200 ارب روپے کا ریلیف دے کر پاکستان میں معاشی سرگرمیوں کو فروغ دیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں