11

ٹیکس وصولیوں کے ہدف میں مزید 26 ارب روپے کی کمی

ٹیکس وصولیوں کا ہدف 4717 ارب روپے سے کم کرکے 4691 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے۔ فوٹو:فائل

ٹیکس وصولیوں کا ہدف 4717 ارب روپے سے کم کرکے 4691 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے۔ فوٹو:فائل

 اسلام آباد: حکومت نے ٹیکس وصولیوں کا ہدف 4717 ارب روپے سے کم کرکے 4691 ارب روپے مقرر کردیا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق وفاقی حکومت نے رواں مالی سال 2020-21 کیلئے مقرر کردہ ٹیکس وصولیوں کے ہدف پر پھر سے نظر ثانی کرتے ہوئے مزید 26 ارب روپے کی کمی کردی ہے، اور ٹیکس وصولیوں کا ہدف 4717 ارب روپے سے کم کرکے 4691 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے۔

ایف بی آرحکام کا کہنا ہے کہ کوشش کی جائے گی کہ رواں مالی سال کے اختتام پر ٹیکس وصولیاں 4700 ارب روپے سے تجاوز کرجائیں، رواں مالی سال کیلئے انکم ٹیکس اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی مد میں وصولیوں کے ہدف میں کمی کی گئی ہے، اور سیلز ٹیکس اورورکرز ویلفیئر فنڈ کی مد میں وصولیوں کا ہدف بڑھا دیا گیا ہے، ورکرز پرافٹ شراکتداری فنڈ اور کیپیٹل ویلیو ٹیکس کی مد میں وصولیوں کے اہداف میں کمی کردی گئی ہے۔

ایف بی آر نے رواں مالی سال2020-21 میں ٹیکس وصولیوں کا ہدف 4963 ارب روپے مقرر کیا تھا، لیکن پھر نظر ثانی کرتے ہوئے246 ارب روپے کی کمی کے ساتھ 4717 ارب روپے کیا گیا تھا جس میں اب مزید 26 ارب روپے کی کمی کی گئی ہے۔

انکم ٹیکس وصولیوں کا ہدف 2032.56 ارب روپے سے کم کرکے 1779.92 ارب روپے کردیا گیا ہے، سیلز ٹیکس وصولیوں کا ہدف 1919 ارب روپے سیبڑھا کر1927 ارب روپے کردیا گیا ہے، ایکسائز ڈیوٹی کی مد میں وصولیوں کا ہدف 361 ارب روپے سے کم کرکے275 ارب روپے اور کسٹمز ڈیوٹی کی مد میں وصولیوں کا ہدف 640 ارب روپے سے بڑھاکرکے700 ارب روپے کردیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں